212

بیماری میں بھی طرفداری کشمیرکیلئے مخصوص 5ہزار’کووڈ19،ٹیسٹنگ کٹس‘

سرینگرہوائی اڈے سے جموں بھیجنے کاانکشاف
نیوزمانٹرینگ

سری نگر:۶۱،اپریل:اسبات کاسنسنی خیزانکشاف ہواہے کہ کشمیرکیلئے مخصوص کووڈ19،ٹیسٹنگ کٹس کو سری نگرہوائی اڈے سے پُراسرارطورپرجموں پہنچایاگیا،اوراس غلط اقدام کیلئے انتظامیہ کے کچھ اعلیٰ افسران ذمہ دارہیں جوموجودہ نازک ترین صورتحال میں بھی علاقہ پرستی اورمتعصبانہ ذہنیت رکھتے ہیں ۔ملک کے کئی شہروں سے شائع ہونے والے ایک موقر انگریز ی روزنامہ ’دی ہندﺅ‘میں چھپی ایک رپورٹ کے مطابق مرکزی وزارت صحت کی جانب سے کووڈ19کے مشتبہ مریضوں کی تشخیص یاٹیسٹ کیلئے درکار5ہزارٹیسٹنگ کٹس نئی دہلی سے ایک جہازمیں سری نگربھیجے ۔اورجب یہ ٹیسٹنگ کٹس سری نگرہوائی اڈے پرپہنچے توپُراسرارطورپر یہاں سے یہ سارے ٹیسٹنگ کٹس جموں روانہ کئے گئے ۔نیوزرپورٹ کے مطابق جب محکمہ صحت اورطبی تعلیم کے حکام کواسکی اطلاع ملی توانہوں نے فوری ضرورت کے حامل اوراہم ترین ٹیسٹنگ کٹس کوسری نگر
سے جموں بھیجنے کامعاملہ چیف سیکرٹری کی نوٹس میں لایا۔بتایاجاتاہے کہ چیف سیکرٹری کی مداخلت پرجموں بھیجے گئے ٹیسٹنگ کٹس کوواپس سری نگربھیجاگیالیکن واپس بھیجے گئے ٹیسٹنگ کٹس پانچ ہزارکے بجائے چارہزار ہی تھے ۔بتایاجاتاہے کہ ٹیسٹنگ کٹس کی فراہمی میں تاخیر کی وجہ سے SKIMSاورSMHSسری نگر میں موجود تقریباً1300افرادکے نمونوں کی جانچ یاتشخیص کاعمل متاثرہوا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں