کیرن سیکٹرمیں گھمسان

جھڑپ میں 7جنگجوہلاک
کے این ایس

کپوارہ:۴، ، اگست شمالی کشمیرکے ضلع کپوارہ میں لائن آف کنٹرول کے نزدیک کیرن سیکٹر میںفوج نے 7 جنگجوﺅں کو مار گرانے کا دعویٰ کیا ہے جو وادی کشمیر میں امر ناتھ یاترا پر حملہ کرنے اور امن کو درہم برہم کرنے کی تاک میں بیٹھے تھے ۔ اس دوران فوج کے سرینگر میں مقیم ترجمان کرنل راجیش کالیا نے بتایا کہ فوج کی بارڈر ایکشن ٹیم نے علاقے میں گزشتہ 36 گھنٹوں کے دوران متعدد در اندزی کی کوششوں کو ناکام بنا دیا ہے تاکہ امن اور سکون کے ماحول کو خراب نہ
کیا جا سکے ۔ شمالی کشمیر ضلع کپوارہ میں لائن آف کنٹرول کے نذدیک سنیچر کی شام دیر گئے بارڈر ایکشن فورس (بی اے ٹی) نے پاکستان کی طرف سے آئے ہوئے جنگجوﺅںکے ایک گرپ کو وادی میں دراندازی کی کوشش کے دوران دیکھا اس دوران فوج نے فوری طور کاروائی کرتے ہوئے ان کی کوشش کو ناکام بنانے کی غرض سے انہیں اس طرف نہ آنے کی کوشش کی ہے جس نتیجے میں جنگجوﺅں اور فوج کے درمیان گولیوں کا شدید تبادلہ ہوا جو رات دیر گئے تک جاری رہا ہے۔ جس میں ابتدائی طور اُس پار سے اس پار داخل ہونے والے 7دراندازوں کو مارا گرانے کا فوج نے دعویٰ کیاہے ۔جبکہ علاقے میںفائرنگ کا سلسلہ جارہی تھا ۔ دفاعی ذرایع نے بتایا علاقے میں درانادزی کی کوششیں جاری ہے جن کو فوج نے منہ توڈ جواب دیکر ان کی کوششوں کو ناکام بنا دیا یا انہوںں نے بتایا جو دراندز اس طر ف داخل ہوئے تھے انہیں موقعے پر ہلاک کیا گیا ہے“۔سرینگر میں مقیم دفاعی ترجمان کرنل راجیش کالیا نے میڈیا کو بتایا کہ علاقے میں گزشتہ36کے دوران دراندازی کی متعدد کوشیں ہوئی ہیں جن کو بارڈر ایکشن ٹیم (بی اے ٹی ) نے ناکام بنا دیا ہے ۔ترجمان نے مذید بتایا وادی کشمیر میں امن کو درہم برہم کرنے کے علاوہ امر ناتھ یاترا اور سیاحوں کو نشانہ بنانے کی غرض سے گزشتہ شام سے متعدد کوششیں کی گئی ہیں جن کو باڈر ایکشن فورس نے ناکام بنا دیا ہے اور اس طرح سے انہیں یہاں کے پر امن ماحول کو خراب کرنے کی اجازت نہیں دی گئی ہے ۔فوجی ترجمان نے مذید بتایا کہ جمعہ اور سنیچر کووادی کشمیرمیں مختلف علاقوں میں4جیش جنگجوﺅں کوجاں بحق کیا گیا ہے جبکہ مارے گئے جنگجوﺅں کے قبضے سے پاکستانی اسلحہ اور گولہ بارود ضبط کیا گیا ہے جن میں سنیپر رائفل ،بارود سرنگ وغیرہ قابل ذکر ہیں انہوں نے بتایا سے چیزوں سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ کشمیر میں جنگجوئیت میں پاکستان کا ہاتھ ہے انہوں نے بتایا فوج ہر ایک کاروائی کا مُنہ توڑ جواب دے رہا ہے ۔قابل ذکت بات یہ ہے جمعہ کو جی او سی ویکٹر فورس لفٹنٹ جنرل کے جے ایس دہلن پرس کانفرنس میں بتایا تھا جنگجوﺅںکے دراندازی کے حوالے سے ایک پرس کانفرنس بھی دی تھی ۔خیال رہے وادی کشمیر میں سرکار کی جانب سے امرناتھ یاتریوں اور سیاحوں پر حملوں کے اطلاعات موصول ہونے کے بعد انہیں فوری طور اپنا دورہ وادی کو ختم کر کے فوری طور وادی سے واپس جانے کے لئے کہا گیا ہے تاکہ کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہ آئے ۔ جس کے نتیجے میں وادی کی عوام میں سیاحوں کو نکالنے اور دیگر طرح کے خدشات کے پیش نظر عوام میں سخت بے چینی او
ر اضطراب پیدا ہوا ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *