106

جموں و کشمیر بینک کی پیشکش

جموں وکشمیرسرکار کو250آکسیجن کونسنٹریٹر دینے کوتیار
مختلف اسپتالوں میں لوگوں میں ماسکس اور سینی ٹائزر تقسیم
سرینگر/8مئی : جموں و کشمیر یونین ٹیریٹری میں سب سے بڑا مالی ادارہ ہونے کے ناطے موجودہ کووڈ حالات میں اپنی سماجی ذمہ داری کا احساس نبھاتے ہوئے جموں و کشمیر بینک نے سرکاری انتظامیہ کو 250 آکسیجن کونسنٹریٹر دینے کی پیشکش کی ہے۔ ہم موجودہ کورونا وائرس کے مشکل حالات میں اپنے لوگوں کے ساتھ جذباتی طور جڑے ہوئے ہیں اور اپنی طور جو کچھ بھی ممکن ہے ،ہم اپنے لوگوں کیلئے پیشکش رکھ رہے ہیں۔ ان باتوں کا اظہار بینک کے چیئرمین و منیجنگ ڈائریکٹر راجیش کمار چھبر نے کیا۔ انہوں نے کہا کہ آکسیجن مشینوں کے علاوہ ہم جموں و کشمیر کے کووڈ مریضوں اور تیمار داروں کیلئے کھانا، پانی، ماسکس اور
سینی ٹائرزر بھی مختلف جگہوں پر بانٹ رہے ہیں۔ موجودہ حالات میںبینک سٹاف کے رول کو درشاتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کی پہلی لہر کے دوران انہوں نے اپنی تنخواہ سے پانچ کروڑ روپے جمع کئے جو کہ لفٹنٹ گورنر کے جے اینڈ کے ریلیف فنڈ کو بطور عطیہ دئے گئے۔انہوں نے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ سرکاری کی طرف سے جاری ضروری ہدایات پر عمل کریں اور زیادہ سے زیادہ ڈجیٹل بینکنگ کا ستعمال کریں تاکہ اپنے گھروں سے کم سے کم نکلا جائے۔بینک چیئرمین نے جموں و کشمیر کے اپنے تمام زونل ہیڈس کی ایک آن لائن میٹنگ بھی طلب کی جس میںانہیں یہ ہدایات دی گئیں کہ تما م بڑے سرکاری اسپتالوں کے آس پاس امدادی کیمپ لگائے جائیں۔دریں اثناءبینک نے آج گورنمنٹ میڈیکل کالج جموں اور میڈیکل کالج سرینگر اور صورہ میڈیکل انسٹی چیوٹ میں ماسکس، پانی کی بوتلیں اور کھانا تقسیم کیا۔ زونل ہیڈ جموں سینٹرل وَن شریش شرما اور زونل ہیڈ کشمیر سینٹرل وَن سید شفاعت حسین رفائی کی قیادت میں دو ٹیموں نے راحت کاری کیپموں کا اہتمام کیا اور آئندہ دنوں میں ایسے ہی کیمپ دیگر زونوں میں منعقد کئے جائیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں