460

جموں وکشمیرنے دفعہ370کی منسوخی کے بعد

’ حقیقی جمہوریت ، ترقی ، اچھی حکمرانی اور بااختیاری‘دیکھی
2سالوں نے ہندوستان کی وحدت اور سا لمیت کو مضبوط بنایا:وزیرخارجہ ایس جے شنکر
تاریخی اقدام جموں و کشمیر میں امن اور ترقی کا دور لے کر آیا:وزیرمملکت میناکشی لیکھی
نیوز سروس

سری نگر:۵،اگست:وزیرخارجہ سبرامنیم جے شکرنے جمعرات کوکہاکہ دفعہ370کی منسوخی کے بعد جموں و کشمیر نے حقیقی جمہوریت دیکھی ہے۔وزیرخارجہ نے خصوصی آئینی پوزیشن کی تنسیخ اورجموں وکشمیرکی تقسیم وتنظیم نوکے 2سال مکمل ہونے کے موقعہ پرکہاکہ مرکزی علاقہ جموں وکشمیر نے دفعہ370کی منسوخی کے بعد’ حقیقی جمہوریت ، ترقی ، اچھی حکمرانی اور بااختیاری‘دیکھی ہے۔ انہوں نے کہاکہ پچھلے2سالوں نے ہندوستان کی وحدت اور سا لمیت کو مضبوط بنانے میں مدد کی ہے۔نیا جموں کشمیر کے ہیش ٹیگ کے ساتھ ، وزیرخارجہ جے شنکر نے ٹویٹ کیا ’جموں و کشمیر نے پچھلے2سالوں میں حقیقی جمہوریت ،
ترقی ، اچھی حکمرانی اور بااختیاری دیکھی ہے۔ اس کے نتیجے میں ہندوستان کی وحدت اور سالمیت بے حد مضبوط ہوئی ہے۔وزیر مملکت برائے امور خارجہ میناکشی لیکھی نے کہا کہ 5 اگست 2019 کو آرٹیکل 370 کو منسوخ کرنے کے تاریخی اقدام نے جموں و کشمیر میں امن اور ترقی کا دور شروع کیا ہے۔انہوں نے کہاکہ 2 سال قبل اس دن آرٹیکل370 منسوخ کیا گیا تھا۔ تاریخی اقدام جموں و کشمیر میں امن اور ترقی کا دور لے کر آیا ہے۔ وزیراعظم نریندر مودی جی اور امیت شاہ جی کی قیادت میں ہم نئےجموں کشمیر کی تشکیل کے گواہ ہیں۔وزیر خارجہ اور وزیر مملکت کا یہ بیان اس وقت سامنے آیا ہے جب پاکستان مسئلہ کشمیر پر بھارت کے خلاف حمایت حاصل کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔ پاکستان نے اسلامی تعاون تنظیم کے مستقل انسانی حقوق کمیشن کی ٹیم کو پاکستان کے مقبوضہ جموں و کشمیر کے دورے کی دعوت دی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں