712

گورنر انتظامیہ عوامی حکومت کا نعم البدل نہیں

جموںوکشمیر میں سیاسی عمل کو شروع کیا جائے :ڈاکٹر کرن سنگھ
یوپی آئی

سرینگر:۴۱، اکتوبر//سابق صدر ریاست نے مرکزی حکومت پر زور دیا ہے کہ جتنی جلد ممکن ہو سکے جموںوکشمیر میں سیاسی عمل کو شروع کیا جائے ۔ انہوںنے کہاکہ گورنر انتظامیہ عوامی حکومت کا نعم البدل نہیں ہوسکتی ہے لہذا چناو کے ذریعے ہی بہتر حکومت کی تشکیل ممکن ہو پائے گی۔ جموں وکشمیرکے سابق صدر ریاست ڈاکٹر کرن سنگھ کا کہنا ہے کہ جموںوکشمیر میں سیاسی عمل شروع کرنے کی اشد ضرورت ہے۔ انہوںنے مرکزی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ سیاسی عمل شروع کرنے میں اب دیری نہیں ہونی چاہئے کیونکہ گورنر انتظامیہ عوامی حکومت کا نعم البدل نہیں ہو سکتی ہے۔ انہوںنے کہاکہ اگر چہ جموںوکشمیر میں یوٹی انتظامیہ بہتر کام کررہی ہے لیکن یہ عوامی حکومت کا متبادل نہیں ہوسکتا ہے ۔ انہوںنے کہاکہ عوامی حکومت کی تشکیل کیلئے جلدازجلد الیکشن ہونے چاہئے تاکہ جمہوریت کی جڑیں یہاں پر مضبوط
ہو سکے۔ ڈاکٹر کرن سنگھ نے حد بندی کمیشن سے التجا کی کہ وہ فوری طورپر اپنی رپورٹ پیش کریں تاکہ جلد از جلد الیکشن کرانے کی راہ ہموار ہو سکے۔ انہوںنے کہاکہ جونہی حد بندی کمیشن کا عمل پورا ہو جائے تو جموںوکشمیر کو دوبارہ ریاست کا درجہ بحال ہونا چاہئے تاکہ آزادانہ اور منصفانہ چناو ہو سکے۔ ڈاکٹر کرن سنگھ کا مزید کہنا تھا کہ مجھے یقین ہے کہ آئندہ چند مہینوں کے اندرا ندر جموںوکشمیر میں چناو ہونگے ۔ انہوںنے کہاکہ حد بندی کمیشن کی رپورٹ کے بعد ریاست کا درجہ بحال کرنا ناگزیر ہے جس کیلئے سبھی سیاسی پارٹیوں نے اپنی آراءبھی پیش کی ہے۔ حالیہ شہری ہلاکتوں پر ڈاکٹر کرن سنگھ نے بتایا کہ اس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔ انہوںنے کہاکہ شہری ہلاکتوں پر روک لگانے کی ضرورت ہے تاکہ جموں وکشمیر میں پُر امن فضا قائم ہو سکے۔ انہوںنے کہاکہ اس طرح کے واقعات ہمیں یہ باور کرا رہے ہیں کہ سیکورٹی گرڈ کو مزید مضبوط کرنے کی ضرورت ہے تاکہ ملک دشمن عناصر کے منصوبوں کو ناکام بنایا جاسکے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں