37

بانڈی پورہ میں لشکر طیبہ کے ایک بڑے نیٹ ورک کاپردہ فاش

3ملی ٹنٹ اورایک خاتون سمیت7افراد گرفتار
اسلحہ وگولی بارود،2نجی گاڑیاں اور4اسکوٹر وموٹرسائیکل ضبط :پولیس
نیوز ایجنسی

سری نگر:۶۱،مئی:پولیس نے پیر کے روز شمالی کشمیر کے بانڈی پورہ ضلع میں ایک خاتون سمیت7 جنگجوﺅں اور ان کے ساتھیوں کو گرفتار کرکے لشکر طیبہ کے ایک ماڈیول کا پردہ فاش کیا ۔پولیس نے ایک بیان میں بتایاکہ بانڈی پورہ ضلع میں حالیہ ملی ٹنسی کے واقعات سے متعلق مقدمات کی تحقیقات کے دوران، پولیس نے سیکورٹی فورسز کےساتھ مل کر لشکر طیبہ کے ایک ماڈیول کا پردہ فاش کرتے ہوئے ایک فعال پاکستانی تربیت یافتہ ملی ٹنٹ،2 ہائبرڈ ملی ٹنٹ اور4دیگر ملی ٹنٹ گرفتار کئے ۔ ایک پولیس ترجمان نے نیوز کو ایک بیان میں کہاکہ پاکستانی تربیت یافتہ ملی ٹنٹ کی شناخت عارف اعجاز شہریی ولد عجاز احمد عرف انفال آف نادی ہل بانڈی پورہ کے طور پر ہوئی
ہے، جو 2018 میں واہگہ بارڈر کے ذریعے درست ویزے پر پاکستان گیا تھا اور غیر قانونی اسلحہ حاصل کرنے کے بعد واپس اس طرف گھس آیا تھا اور بانڈی پورہ میں لشکر طیبہ کے ساتھ فعال طور پر کام کرنا شروع کیا۔پولیس ترجمان نے ہائبرڈ عسکریت پسندوں کی شناخت اعجاز احمد ریشی ولد عبدالمجید ساکن رام پورہ اور شارق احمد لون ولد محمد صادق لون گنڈ پورہ کے طور پر کی۔ پولیس کے مطابق گرفتار عسکریت پسندوں کو خاص طور پر ضلع بانڈی پورہ میں پولیس/ایس ایف اور دیگر نرم اہداف پر حملے کرنے کا کام سونپا گیا تھا۔چاروں ملی ٹنٹوںکی شناخت ریاض احمد میر عرف میٹھا شہری ولد غلام محمد میر ساکنہ پلان بانڈی پورہ، غلام محمد وازہ عرف گل باب ولد غلام قادر وازہ ساکنہ توحید آباد باغ، مقصود احمد ملک ولد محمد جمال ملک چٹی بانڈی اور شیما شفیع وازہ بیٹی محمد شفیع توحید آباد باغ کے بطور ہوئی ہے۔ترجمان نے کہاکہ ابتدائی تحقیقات سے پتہ چلا ہے کہ گرفتار جنگجوﺅںکے ساتھی عسکریت پسندوں کو پناہ دینے، لاجسٹک/مواد کی مدد فراہم کرنے میں ملوث تھے جن میں (عسکریت پسندوں) کو ضلع بانڈی پورہ میں نقل و حمل شامل تھا۔پولیسترجمان نے مزید کہاکہ گرفتار خاتون عسکریت پسند ساتھی وائی فراہم کرنے میں بھی ملوث تھی۔انہوں نے کہا کہ ان کے قبضے سے 2 پستول، پستول کے3 میگزین، پستول کے25 راو نڈ، 3 دستی بم سمیت مجرمانہ مواد، اسلحہ گولہ بارود برآمد کیا گیا ہے۔اس کے علاوہ ایک ایکو وین زیرنمبرJK15A-1528جسے بانڈی پورہ سے نوگام، پانتھا چوک اور سری نگر تک عسکریت پسندوں کو لے جانے میں استعمال کیا جا رہا تھا۔پولیس ترجما ن نے بتایاکہ گرفتار شدگان کی تحویل سے 3 اسکوٹیز بھی ضبط کی گئیں جو پولیس، سیکورٹی اداروں، سیکورٹی فورسز کی نقل و حرکت پر نظر رکھنے اور بانڈی پورہ علاقوں میں عسکریت پسندوں کو لے جانے کے لیے استعمال کی جا رہی تھیں۔ انہوں نے مزید کہاکہ اسی طرح، ایک ماروتی800 کار اور ایک پلسر بائیک بھی ضبط کر لی گئی۔بیان میں مزید کہا گیا کہ قانون کی متعلقہ دفعات کے تحت مقدمات درج کر لیے گئے ہیں اور مزید تفتیش جاری ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں