154

امرناتھ یاتریوں کیلئے 70مقامات پر طبی سہولیات کاانتظام،100ایمبولنس بھی دستیاب

بال تل اورچندن واڑی میں70بستروں والے2 اسپتال
ہر2 کلومیٹر سے بھی کم فاصلے پر طبی مراکز،1500 صحت کارکن تعینات:ڈائریکٹر ہیلتھ سروسزکشمیر
نیوزایجنسی

سری نگر:۵۲، جون:ڈائریکٹوریٹ آف ہیلتھ سروسز کشمیر نے ہفتہ کو کہا کہ اس سال امرناتھ یاترا کےلئے70مقامات پرطبی سہولیات اور 100 ایمبولینس دستیاب ہیں۔ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز کشمیر ڈاکٹر مشتاق احمد راتھر نے یہاں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ محکمہ ہیلتھ سروسز کشمیر نے جواہر ٹنل سے لے کرامرناتھ غار تک دونوں راستوں پر 70جگہوں پر فوری طبی و صحت کی سہولیات رکھی ہیں جن میں چندن واڑی پہلگام اور بال تل سونہ مرگ شامل ہیں ۔انہوںنے کہاکہ ان میں سے 6 بیس ہسپتال،طبی امدادی مراکز، ہنگامی امداد کے مراکز اور 26 آکسیجن بوتھ بھی شامل ہیں۔ ڈاکٹر مشتاق احمد راتھر نے کہا کہ اس کے علاوہ ان کے پاس 11 آن روٹ سہولیات، 17 دیگر سہولیات ہیں جنہیں الرٹ رکھا گیا ہے اور 100 سے زائد کریٹیکل اور بیسک کیئر ایمبولینسز بھی دستیاب رکھی گئی ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ آس پاس کے تمام اسپتالوں میں ایمرجنسی ریسپانس سسٹم موجود ہوگا اور انہیں چوبیس گھنٹے کام کرنے کےلئے تمام سہولیات اور مناسب عملہ سے لیس کیا گیا ہے۔ڈائریکٹوریٹ آف ہیلتھ سروسز کشمیرکاکہناتھاکہ بال تل سونہ مرگ اورچندن واڑی پہلگام میں2وقف شدہ70بستروں والے اسپتال چالو رکھے گئے ہیں۔انہوںنے ساتھ ہی کہاکہ ہمارے پاس ہر2 کلومیٹر سے بھی کم فاصلے پر طبی سہولیات دستیاب ہیں جن میں حرکت پذیر آکسیجن بوتھ ہیں اور کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کیلئے موبائل میڈیکل بوتھ کے علاوہ حرکت پذیر ایمرجنسی سسٹم بھی موجود رکھا گیا ہے۔ ڈاکٹر مشتاق احمد راتھر نے مزید کہا کہ انہوں نے دونوں طرف آئی سی یو بسترے اور آکسیجن دستیاب رکھی ہوئی ہے اور عملے کے کم از کم1500 ارکان کو تین شفٹوں میں کام کرنے کیلئے تعینات کیا جا رہا ہے جس میں ہر سطح پر ان کے لئے اضافی رہائشی سہولیات موجود ہیں۔انہوں نے یاتریوں سے گرم کپڑے اپنے ساتھ رکھنے کی درخواست کرتے ہوئے کہاکہ آئسولیشن کی سہولیات بھی ہر جگہ دستیاب رکھی گئی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں